آخری وقت کی نبوت کے مطابق کیا ہونے والا ہے ؟




سوال: آخری وقت کی نبوت کے مطابق کیا ہونے والا ہے ؟

جواب:
آخری وقت کے بارے میں بائبل بہت کچھ کہتی ہے ۔ تقریبا ً بائبل کی ہر کتاب آخری وقت کے بارے میں نبوت رکھتی ہے ۔ اِن تمام نبوتوں کو حاصل کرنا اور اُنہیں اکٹھا کرنا مُشکل ہو سکتا ہے ۔ نیچے بہت مختصر خلاصہ دیا گیا ہے کہ جو کچھ آخری وقت میں ہو گا اِس کے بارے میں با۴بل فرماتی ہے ۔

مسیح ایک واقعہ میں جو کہ دوبارہ زندہ ہونے کے طور پر جانا جاتا ہےتمام ایمانداروں کو زمین میں سے دوبارہ اُٹھائے گا ( 1 تھسلینکیوں 4 : 13 ۔ 18، 1 کرنتھیوں 15 : 51۔54 ) سچ کی منصفانہ کُرسی پر یہ ایماندار اپنے وقت کے دوران زمین پر اچھے کام اور وفادارانہ خدمت کے لیے انعام سے نوازے جائیں گے ۔ یا انعام سے محروم رہیں گے ، لیکن خدمت اور تابعداری کی کمی کی وجہ سے ابدی زندگی سے محروم نہیں رہیں گے ( 1 کرنتھیوں 3 : 11۔15، 2کرنتھیوں 5 : 10 )

مسیح کا منکر اپنی طاقت میں آئے گا اور اسرائیل کے ساتھ سات سال کے لیے عہد کرےگا ( دانی ایل 9: 27) یہ سات سالہ عرصہ " مصیبت کے دور" کے طور پر جانا جاتا ہے ۔ مصیبت کے دوران یہاں پر خوفناک جنگیں ، وبائیں ، طاعون اور قدرتی تباہ کاریاں ہوں گی ۔ خدا گناہ ، بدی ، بد کاری کے خلاف اپنا غضب انڈیلے گا ۔ مصیبت کے دور میں اپوکیلیپس کے چار گڑ سواروں اور سات مہروں ، نقارے اور کلمہ انصاف کا ظہور شامل ہے۔

تقریبا ً سات سالوں کے درمیان منکرِ میح اسرائیل کے ساتھ امن کا عہد توڑ ڈالے گا او ر اِس کے خلاف جنگ کرے گا ۔ مسیح کا منکر "The abomination of desolation" کرے گا اور یروشلم کی ہیکل میں پرستش کے لے اپنا بُت رکھے گا ( دانی ایل 9 : 27 ، 2تھسلینکیوں 2 : 3 ۔ 10) جو کہ دوبارہ تعمیر کیا جائے گا ۔ مصیبت کا دوسرا حصہ" بڑی مصیبت" کے طور پر جانا جاتا ہے ( مکاشفہ 7 : 14 ) اور " یعقوب کی مصیبت کا وقت ہے " ( یرمیاہ 30: 7 )

سات سالہ مصیبت کے اختتام پر منکر ِ مسیح یروشلم پر آخری حملہ کرے گا ، ہر مجدون کی جنگ میں اختتام کرے گا ۔ یسوع مسیح واپس آئے گا ، منکرِ مسیح اور اُس کی افواج کو نیست و نابود کرے گا اور اُنہیں آگ کی جھیل میں پھینکے گا ( مکاشفہ 19 : 11 ۔21 ) ۔ پھر مسیح شیطان کو 1000سال کے لیے اتھا ہ گڑے میں باندھے گا اور وہ ایک ہزار سال کی مد کے لیے اپنی زمینی بادشاہت پر حکومت کرے گا ( مکاشفہ 20 : 1 ۔6 )

ہزار سال کے اختتام پر ، شیطان آزاد کر دیا جائے گا ، دوبارہ شکست دی جائے گی اور پھر ہمیشہ کے لیے آگ کی جھیل میں پھینک دیا جئے گا ( مکاشفہ 20 : 7 ۔10 ) پھر مسیح تمام بے ایمان کابڑے سفید تخت پر بیٹھے ہوئے انصاف کرتا ہے ( مکاشفہ 20: 10-15 )

ان سب کو آگ کی جھیل میں پھینکتے ہوؕئے ۔ پھر مسیح ایک نئے آسمان اور نئی زمین اور نئے یروشلم کے ایمانداروں کے لیے رہنے کی ابدی جگہ کے دروازے کھولے گا ۔ وہ پر گناہ ، غم یا موت کے سوا کچھ نہیں ہو گا ( مکاشفہ 21 -22 ) ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



آخری وقت کی نبوت کے مطابق کیا ہونے والا ہے ؟