میں نے ابھی ابھی یسوع پر ایمان لایا ہے۔۔۔۔۔ اب مجھے کیا کیا کرنا ہے؟



میں نے ابھی ابھی یسوع پر ایمان لایا ہے۔۔۔۔۔ اب مجھے کیا کیا کرنا ہے؟

پ کو مبارک ہو! آپ نے زندگی کے بدلاؤ کا فیصلہ لیا ہے! شاید آپ پوچھ رہے ہوں گے کہ اب مجھے کیا کرنا ہے؟ میں خداکے ساتھ اپنے سفر کو کیسے شروع کروں؟" ذیل میں جن پانچ اقدام کا ذکر کیا گیا ہے وہ آپ کو پاک کلام سے رہنمائی کرے گا۔ آپ کے سفر کے دوران آپ کے پاس جو بھی سوالات ہوں اس کے لئے ہمارے ویب سائٹ پر جائیں۔ www.GotQuestions.org/Urdu.

1۔اس بات کا یقین کریں کہ آپ نجات کی بابت سجمتھے ہیں۔

1 یوحنا 5:13 ہم سے کہتا ہے کہ "میں نے تم کو جو خدا کے بیٹے کے نام پر ایمان لائے ہو یہ باتیں اس لئے لکھیں کہ تمہیں معلوم ہو کہ ہمیشہ کی زندگی رکھتے ہو"۔

خدا چاہتا ہے کہ ہم نجات کو سمجھیں۔ خداہم سے چاہتا ہے کہ ہم پورے بھروسے کے ساتھ یقین کریں کہ ہم بچائے گئے ہیں۔ سو آئیے ہم مختصر طور پر نجات کے اہم مدعوں پر غور کریں۔

(a) ہم سب نے گناہ کیا ہے۔ ہم نے کئی بار ایسے ایسے کام کئے ہیں جس سے خدا نا خوش ہوتا ہے (رومیوں 3:23)

(b) ہمارے گناہوں کے سبب سے ہم خدا سے ابدی جدائی کے سزا کے حقدار ہوتے ہیں (6:23)

(c) یسوع صلیب پر مرا تاکہ ہمارے گناہوں کا جرمانہ ادا کرے (رومیوں 5:8؛2 کرنتھیوں 5:21)۔ یسوع ہمارے گناہوں کی سزاؤں کو جن کے ہم حقدار تھے اپنے او پر لے کر ہمارے بدلے میں مر گیا۔ اس کا جی اٹھنا یہ ثابت کرتا ہے کہ یسوع کی موت ہمارے گناہوں کا خامیازہ بھرنے کے لئے کافی تھا۔

(d) ان تمام لوگوں پر جو یسوع پر ایمان لاتے ہیں اور یہ بھروسہ کرتےہیں کہ اس کی موت ہمارے گناہوں کے لئے جرمانہ بطور ہے تب خدا انہیں معافی اور نجات دیتا ہے (یوحنا 3:16؛ رومیوں 5:1؛ رومیوں 8:1)۔

یہ ہے نجات کا پیغام! اگر آپ مسیح یسوع پر اپنا شخصی نجات دہندہ بطور ایمان لاچکے ہیں تو آپ بچائے گئے ہیں! آپ کے تمام گناہ معاف کردیئے گئے ہیں اور خدا وعدہ کرتاہے کہ نہ وہ آپ کو ترک کرے گا اور نہ چھوڑے گا (رومیوں 39-38 :8؛ متی 28:20)۔ اس بات کو یاد رکھیں کہ آپکی نجات مسیح یسوع میں محفوظ ہے (یوحنا 29-28 :10)۔ اگر آپ اپنا نجات دہندہ بطور صرف اور صرف یسوع پر بھروسہ کر رہے ہیں، تو آپ سچ مچ یقین کر سکتے ہیں کہ آپ آسمان میں خدا کے ساتھ اپنی ابدیت گزاریں گے۔

2۔ ایک اچھی کلیسا ڈھونڈیں جوکتاب مقدس کی تعلیم دیتی ہے۔

کلیسا یعنی ‍ چرچ کو عمارت بطور نہ سوچیں۔ کیونکہ کلیسا یا چرچ کا مطلب ہے لوگ، ایمانداروں کا جھنڈ یا ایک جماعت۔ یہ بہت ضروری ہے کہ مسیح یسوع میں جو ایماندار ہیں ان کی آپس میں ایک دوسرے کے ساتھ رفاقت ہو۔ یہی تو کلیسیا کے ابتدائی مقصدروں میں سے ایک ہے۔ جب کہ آپ مسیح یسوع پر ایمان لائے ہوئے ہیں تو ہم بڑی تاکید کے ساتھ آپ کی حوصلہ افزائی کرناچاہتے ہیں کہ آپ اپنے علاقہ میں پاک کلام پائبیل پر بھروسہ رکھنے والی کلیسیا کو ڈھونڈیں اور اس کلیسیا کے پادری سے بات چیت کریں۔ اور اس کلیسیا کے ساتھ لگاتار جڑے رہیں اس پادری کو مسیح یسوع پر جو آپ کاایمان ہے اسے جاننا چاہتے۔

کلیسیا کا دوسرا مقصد ہے کہ پاک کلام کی تعلیم دے۔ آپ سیکھ سکتے ہیں کہ کس طرح خدا کے احکام اور ہدایات کو اپنی زندگی میں عملی جامہ پہنائیں۔ کلام پاک کو سمجھنا مسیحی زندگی کا ایک کامیاب اور حد سے زیادہ طاقتور وسیلہ ہے 2 تیموتھیس 17-16 :3 کہتا ہے کہ "ہر ایک صحیفہ (یعنی کلام پاک کا ہر ایک حصہ) جوخدا کے الہام سے ہے تعلیم اور الزام اور اصلاح اور راستباز میں تربیت کرنے کے لئے فائدہ مند ہے۔ تاکہ مرد خدا (ایماندار) کامل بنے اور ہر ایک نیک کام کے لئےبالکل تیار ہو جائے"۔

کلیسیا کا تیسرا مقصد ہے عبادت۔ خدا نے جو کچھ آپکی زندگی میں کیا ہے اس کاشکر کرنا عبادت ہے! خدا نے ہم کو بچایا ہے وہ ہم سے محبت رکھتاہے اور ہمیں راستہ دکھاتا ہے۔ وہ ہماری رہبری کرتا اور ہماری رہنمائی کرتا ہے۔ ہم اس کا شکریہ اداکئے بنا کیسے رہ سکتے ہیں؟ خدا پاک ہے، وہ مقدم ہے، جو محبتی ہے، وہ رحم کرنے والا ہے، وہ بہت زیادہ فضل کرتاہے۔ مکاشفہ 4:11 منادی کرتی ہے کہ "اے ہمارے خداوند اور خدا تو ہی تمجید اور عزت اور قدرت کے لائق ہے کیونکہ تو ہی نے سب چیزیں پیداکیں اور وہ تیری ہی مرضی سے تھیں اورپیداہوئیں"۔

3۔ خدا دھیان منن کرنے کے لئے ہر دن ایک وقت مقرر کریں۔

ہمارے لئے یہ بہت ہی ضروری ہے کہ ہم ہر دن خدا کی طرف دھیان منن کرنے اور دعا بندگی کے لئے کچھ وقت گزاریں۔ کچھ لوگ اس کو "خاموشی کا وقت"کہتے ہیں اور دیگر لوگ اس کو نما، عبادت یا عقیدت کہتے ہیں کیونکہ یہ وہ وقت ہوتا ہے جب ہم خدا کے لئے تنہائی میں یا خاندان کے ساتھ اپنی عقیدت پیش کرتے ہیں۔کچھ لوگ اسے صبح کے وقت ادا کرتے ہیں۔ جبکہ دیگر لوگ اسے راتکے وقت اداکرتے ہیں۔ اس سےکچھ فرق نہیں پڑتا کہ آپ کس وقت اس کو اداکرتے ہیں مگر فرق اس سے پڑے گا کہ آپ بلا ناغہ روزانہ خدا کے ساتھ وقت گزاریں۔ بس یہ دھیان دینا ہے کہ خدا کس ساتھ ہر حال میں کونسا وقت استعمال ہوتا ہے۔

(a) دعا: دعا صرف خدا سے بات کرنا ہوتاہے۔ آپ خدا سے اپنی ضرورتوں اور اپنے مسئلہ جات کے لئے دعا کریں۔ آپ خدا سے التجاکریں۔ کہ وہ آپ کو عقل و فہم اور رہنمائی عطا کرے۔ اپنی تمام حاجتوں کو رفع کرنے کے لئے آپ خدا سےالتجا کریں۔ خدا سے کہیں کہ آپ کتنا کچھ اس سے محبت رکھتے ہیں اور کتنا کچھ اس کے احسانوں اور برکتوں سے متاثرہوتے ہیں۔ اسکی تعریف اور حمد کریں یہی سب کچھ دعا کہلاتی ہے۔

(b) کلام پاک کا مطالعہ: چرچ یعنی کلیسیا میں کلام پاک کی تعلیم کے علاوہ بچوں کے لئے سنڈے اسکول، اور جوانوں کے لئے کلام پاک کا مطالعہ بہت ہی ضروری ہے۔ نہ صرف نوجوانوں کے لئے بلکہ ماں باپ کے لئے بھی کلام پاک کا مطالعہ ضروری ہے۔ ایک کامیاب مسیحی زندگی جینے کے لئے کلام پاک میں وہ ساری باتیں پائی جاتی ہیں جنہیں آپ معلوم کر سکتے ہیں۔ اس میں خدا کی رہنمائی پائی جاتی ہے کہ آپ کس طرح دانشمندانہ فیصلے لیں، کس طرح خدا کی پاک مرضی کو معلوم کریں، کس طرح ایک دوسرے کی خدمت کریں اور کس طرح روحانی طور سے ترقی کریں یا بڑھتے جائیں۔ کتاب مقدس ہمارے لئے خدا کا پاک کلام ہے۔ اور پاک کلام لازمی طور سے ہدایات اور احکام کی دستی کتاب ہے جو ہدایت دیتی ہے کہ کس طرح ہمیں ایسی زندگی جینی ہے جو خدا کو خوش کرے اور ہمارے لئے تسلی بخش ہو۔

4۔ ایسے لوگوں سے رشتہ بڑھائیں جو آپکو روحانی طور سے بڑھنے میں مدد کر سکے۔

1 کرنتھیوں 15:33 ہم سے کہتا ہے کہ "فریب نہ کھاؤ بری صحبتیں اچھی عادتوں کو بگاڑ دیتی ہے"۔ کلام پاک ایسی تنبیہوں سے بھر پور ہے۔ جو برے لوگ ہم پراثر ڈال سکتے ہیں یا ایسوں کے ساتھ وقت گزارنا جو گناہ کی سرگرمیوں میں شرکت کرتے ہیں وہی سرگرمیاں ہمارے لئے آزمائش کا سبب بن سکتے ہیں۔ ان کے بیچ میں رہتے ہوئے ان کی عادتیں ہم کو اور ہماری گواہی کو بالکل سے مٹا سکتی ہیں۔ اس لئے یہ بہت ہی ضروری ہے کہ ہم خود کو ایسے لوگوں سے گھرے رہیں جو خداوند سے محبت رکھنے والے اور خداوند کے لئے مخصوص شدہ ہوں۔

ایک یا دو شخص کو اپنا دوست بنانے کی کوشش کریں جو شاید آپ کے چرچ سے ہوں جو آپ کی مدد کرنے والے اور آپ کی حوصلہ افزائی کرنے والے ہوں (عبرانیوں 3:13؛ 1:24)۔ آپ اپنے دوستوں سے کہیں کہآپ کے خاموشی کے وقت کے بارے میں، آپکی سرگرمیوں کے بارے میں اور خدا کے ساتھ آپ کی رفاقت کے بارے میں ایماندار رہنے کے لئے آپ سے سوال پوچھ سکتے ہیں۔ انہیں یہ اختیار دیں کہ وہ کبھی بھی اور کسی بھی وقت مندرجہ بالا آپ کی سرگرمیوں اور خداوند کے ساتھ لگاتار رشتہ رکھنے کے بارے میں آپ سے پوچھنے کے حقدار ہیں۔ اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہم اپنے ان پرانے دوستوں کو چھوڑ دیں جو خداوند یسوع مسیح کو اپنا شخصی نجات دہندہ بطور نہیں جانتے۔ سو آپ ان کو اپنا دوست بنے رہنے دیں اور ان سے محبت رکھیں۔ صرف انہیں یہ معلوم رہے کہ یسوع مسیح نے آپ کی زندگی بدل دی ہے۔ اور آپ وہ سب کام نہیں کر سکتے جو وہ کرتے ہیں۔ خدا سے دعا کریں کہ وہ آپکو لگاتار ایسے موقع عنایت کرے کہ آپ اپنے دوستوں سے یسوع کے بارے میں بتاتے رہیں۔

5 بپتسمہ لیں:

بہت سے لوگوں کو بپتسمہ کے بارے میں غلط فہمی ہے۔ لفظ بپتسمہ کے معنی ہیں "پانی میں ڈوبنا"۔ بپتسمہ مسیح میں آپ کے ایمان کو ظاہر کرنے اور مخصوصیت کے ساتھ اس کے پیچھے چلنے کا علانیہ اعلان ہے۔ پانی میں ڈبکی لگانے کا عمل مسیح کے ساتھ دفنائے جانے کی مثال پیش کرتا ہے۔ پانی سے باہر آنے کا عمل مسیح کے قیامت کی تصویر پیش کرتاہے۔ بپتسمہ لینے کا مطلب ہے یسوع کے ساتھ مرنے دفنائے جانے اور اس کے ساتھ جی اٹھنے کی بابت خود کی پہچان کرانی ہے۔ (رومیوں 4-3 :6)

بپتسمہ سے آپ بچائے نہیں جاتے۔ بپتسمہ آپکے گناہوں کو نہیں دھوتا۔ بپتسمہ صرف مسیح کے پیچھے چلنے کاایک قدم ہے۔ یہ ایمان کہ صرف مسیح میں آپ کی نجات ہے اس کا ایک عام اعلان۔بپتسمہ کی بہت اہمیت ہے کیونکہ یہ مسیح کے پیچھے چلنے کا ایک قدم ہے۔ علانیہ طور سے مسیح پر ایمان رکھنے اور اس کے لئے مخصوص ہونے کا بھی ایک عام اعلان ہے۔ اگر آپ بپتسمہ لینے کے لئے تیار ہیں تو آپ کو کسی پادری سے ضرور بات کرنی ہوگی۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



میں نے ابھی ابھی یسوع پر ایمان لایا ہے۔۔۔۔۔ اب مجھے کیا کیا کرنا ہے؟