مُجھے کیوں ایک منظم مذہب میں ایمان رکھنا چاہیے ؟




سوال: مُجھے کیوں ایک منظم مذہب میں ایمان رکھنا چاہیے ؟

جواب:
" مذہب" کی تعریف لغت میں اِس طرح کی ہو گی " خداوند یا دیوتائوںپر عبادت کرنے کے لیے ایمان رکھنا جس کا اظہار عام ہر رسومات سے ہوتا ہے ۔ ایمان رکھنے کا کوئی مخصوص نظام جیسے کہ وغیرہ وغیرہ ۔ اکثر اخلاقیات کو اِس میں شامل کیا جاتا ہے ۔ اِس تعریف کی روشنی میں بائبل منظم مذہب کے بارے میں بات نہیں کر تی ہے لیکن بہت سارے معاملات میں " منظم مذہب "کا مقصد اور تاثر کچھ اِس طرح کا نہیں ہے کہ خدا اِس کے ساتھ خوش ہے۔

پئدایش11 باب میں غالبا ً منظم مذہب کی پہلی مثال ہے نوح کی اولاد نے خدا کے حکم پوری دُنیا کو بھر دو کی تابعداری کرنے کی بجائے بابل کے مینار کی تعمیر کے لیے اپنے آپ کو منظم کیا وہ یقین رکھتے تھے کہ اُن کا اتحاد خدا کے ساتھ رشتے سے زیادہ اہم ہے ۔ خدا نے اِس میں مداخلت کی اور اِن کی زبانوں کو بگاڑ دیا ۔ پھر اِس منظم مذہب کو ختم کر دیا۔

خروج 6 باب میں اور آگے بھی خدا نے قوم بنی اسرائیل کے لیے ایک " منظم " مذہب ترتیب دیا دس احکام " اشائے ربانی سے متعلقہ قوانین ، اور قُربانی کا نظام سب کی ابتدا ، خدا سے ہوئی اور اسرائیلوں نے اُن کی پیروی کی ، نئے عہد نامہ کے مزید مطالعہ واضح کر تا ہے کہ اِس مذہب کا مدعا ایک نجات دہندہ مسیح کی ضرورت کے لیے نشاندہی کرنا تھا ۔( گلتیوں 3 ، رومیوں 7 باب) تاہم بہت سارے اِسے غلط سمجھتے ہیں اور خدا کی بجائے اصول اور رسومات کی پرستش کر تے ہیں ۔ اسرائیل کی پوری تاریخ میں اسرائیلیوں نے منظم مذاہب کے ساتھ تنازع سمیت بہت سارے تنازعات کا تجربہ کیا ہے ۔ مثالوں میں بعل کی پرستش ( قضاۃ 6 ، 1 سلاطین 18 ) دجون ( 1 سیموئیل 5 ) اور ملیچ ( 2 سلاطین 23 ؛ 10 ) شامل ہیں ۔ خدا نے اپنا اختیار اور اپنی موجودگی کو ظاہر کر تے ہوئے اَن مذاہب کے پیروکاروں کو شکستِ فاش دی ۔

اناجیل میں فیریسی اور سدیسی مسیح کے دور میں منظم مذاہب کے نمائیدہ کے طور پر بیان ہوئے ہیں ۔ یسوع مسلسل اُن کی غلط تعلیمات اور منافقانہ طرزِ زندگی کے بارے میں اُن کا سامنا کرتا ہے ۔ نئے عہد نامہ کے خطوط میں منظم گروہ تھے، جو کہ اناجیل کو متقاضی کاموں اور رسومات کے ساتھ ملاتے تھے ۔ وہ یمانداروں پر تبدیل ہونے اور " مسیحیت کے اضافی" مذاہب کو قبول کرنے پر بھی زور دیتے تھے ( گلتیوں ) اِس طرح کے مذاہب کے بارے میں خبردار کرتی ہیں۔ مکاشفہ کی کتاب میں منظم مذاہب دُنیا پر اِس طرح کا ایک تاثر قائم کرے گا جیسا کہ مسیح کا انکار کرنے کا نظام ہے یعنی ایک مذہب دُنیا ۔ بہت سارے معاملات میں منظم مذہب کا آخری نتیجہ خدا کی طرف سے ایک تباہی کی صورت میں ہے ۔ تاہم بائبل منظم ایمانداروں کے بارے میں بات نہیں کرتی ہے جو کہ اُس کے منصوبے کا حصہ ہیں ۔ خدا اِن منظم ایمانداروں کی جماعتوں کو " کلیسیا ئیں" کہتا ہے ۔ اعمال کی کتاب اور نئے عہد نامہ کے خطوط کے بیانات نشاندہی کرتے ہیں کہ کلیسیا منظم اور آزاد ہونی چاہیے ۔ تنظیم حفاظت ، پیدوار اور پہنچ سے بالا تر ہے ۔ ( اعمال 2 : 41 ۔ 47 ) ۔ کلیسیا کے معاملے میں ، اِسے " منظم رفاقت " کہنا زیادہ بہتر ہو گا ۔ مذہب انسان کی خدا کے ساتھ رفاقت رکھنے کی جدوجہدکا نام ہے ۔ مسیحی ایمان خدا کے ساتھ رشتہ استوار کرنے کا نام ہے کیونکہ جو کچھ اُس نے ہمارے لیے مسیح یسوع کی قُربای کے وسیلہ سے کیا ہے ۔ یہاں پر خدا تک پہنچنے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے ( و ہ ہماری پہنچ سے بالا تر ہے ( رومیوں 5 : 8 ) کوئی غرور نہیں ( سب کچھ فضل سے حاصل ہوتا ہے ۔ افسیوں 2 : 8 ۔ 9 ) رہنما پر کوئی اختلاف نہیں ہونا چاہیے ( مسیح سردار ہے ۔ کُلسیوں 1 : 18 ) کوئی تعصب نہیں ہونا چاہیے ( ہم سب مسیح میں ایک ہیں ۔ گلتیوں 3 : 28 ) منظم ہونا مسئلہ نہیں ۔ ایک مذہن کی رسومات اور قوانین پر مرکوز ہونا مسئلہ ہے ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



مُجھے کیوں ایک منظم مذہب میں ایمان رکھنا چاہیے ؟