پہلے سے متعین کر دینے کا عمل کیا ہے؟ کیا پہلے سے متعین کر دینے کا عمل ( پیش تر) بائبل کے مطابق ہے ؟




سوال: پہلے سے متعین کر دینے کا عمل کیا ہے؟ کیا پہلے سے متعین کر دینے کا عمل ( پیش تر) بائبل کے مطابق ہے ؟

جواب:
رومیوں 8 : 29 ۔ 30 ہمیں بتاتی ہے ، " کیونکہ جن کو اُس نے پہلے سے جانا اُنکو پہلے سے مقر ر بھی کیا کہ اُس کے بیٹے کے ہمشکل ہوں تاکہ وہ بہت سے بھائیوں میں پہلوٹھا ٹھہرے ۔ اور جن کو اُس نے پہلے سے مقرر کیا اُنکو بُلایا بھی اور جنکو بُلایا اُنکو راستباز بھی ٹھہرایا اور جنکو راستباز ٹھہرایا اُنکو جلال بھی بخشا۔" افسیوں 1 باب اُس کی 5 اور 11 آیت بیان کر تی ہیں ۔ " اور اُس نے اپنی مرضی کے نیک ارادہ کے موافق ہمیں اپنے لیے پیش تر سے مقرر کیا کہ یسوع مسیح کے وسیلہ سے اُس کے لے پالک بیٹے ہوں ۔۔۔ اُسی میں ہم بھی اُس کے ارادہ کے موافق جو اپنی مصلحت سے سب کچھ کرتا ہے پیش تر سے مقرر ہو کر میراث بنے ۔" بہت سارے لوگ پیش تر سے مقرر ہونے کے عقیدے کی ایک مضبوط مخالفت کرتے ہیں ۔ تاہم پیش تر سے مقرر ہونا بائبل کے مطابق ایک عقیدہ ہے ۔ عقل و فہم ایک چابی کی طرح کہ بائبل کے مطابق پیش تر سے مقرر ہونے کا کیا مطلب ہے ۔

کلام میں پہلے سے مقرر کے لیے ترجمہ شُدہ الفاظ اوپر دئے گئے حوالوں میں یونانی لفظ

" سے ہیں جو کہ " وقت سے پہلے مقرر ہونا "، " مقرر کرنا " ، " وقت کے Proorozo”

آنے سے پہلے فیصلہ کرنا " ہیں ۔ پس وقت سے پہلے متعین کرنے کا مطلب یہ ہے کہ خدا وقت کے وقوع پذیر ہونے سے پہلے خاص چیزوں کو مقرر کر رہا ہے ۔ خدا نے وقت کے آنے سے پہلے کیا مقرر کیا تھا ؟ رومیوں 8 : 29 ۔ 30 کے مطابق خدا نے پہلے سے مقرر کیا تھا کہ مخصوص افراد اُس کے بیٹے کے ہمشکل ہوں گے ، بلائے جائیں گے ۔ اور راستباز ٹھہرائے اور جلال پائیں گے ۔ ضروری بات یہ ہے کہ خدا پہلے سے ہی تعین کرتا ہے کہ مخصوص افراد ہی نجات پائیں گے ۔ مسیح میں ایمانداروں کے چُنے جانے کے کلام کے بے شمار حوالے ہیں ( متی 24: 22، 31 ، مرقس 13 : 20، 27 ، رومیوں 8 : 33، 9 : 11 ، 11: 5 ۔ 7 28 ، افسیعں 1 : 11 ، کُلسیوں 3 : 12 ، 1 تھسلینکیوں 1 : 4 ، 1 تیمتھیس 2 : 10 ، ططس 1 : 1 ، 1 پطرس 1 : 1 ۔2، 2 : 9 2 پطرس 1 : 10 ) ۔ پہلے سے مقرر کرنے کا عقیدہ بائبل کا ہے کہ خدا اپنی حاکمیت میں نجات کے لیے مخصوص افراد کو چُنتا ہے ۔

پہلے سے مقرر کیے جانے کے عقیدے پر سب سے عام اختلاف یہ ہے یہ غیر منصفانہ ہے ۔ خدا کیوں مخصوص افراد کو چُنتا ہے اور دوسروں کو نہیں چُنتا ہے؟ یاد رکھنے کے لیے سب سے اہم بات یہ ہے کہ کوئی بھی نجات کا حق دا نہیں ہے ، ہم سب نے گناہ کیا ( رومیوں 3 : 23 ) ، اور سب ابدی ہلاک کے لائق ہیں ( رومیوں 6 : 23 ) ۔ ایک نتیجے کے طور پر خدا ہم میں سے سب کو دوزخ میں ابدی زندگی گزارنے کے اجازت دینے میں کامل منصف ہے ۔ تاہم خدا ہم میں سے کچھ کو نجات کے لیے چُنتا ہے ۔ وہ اُن لوگوں کے ساتھ غیر منصفانہ نہیں ہے جو چُنے نہیں جاتے ہیں کیونکہ وہ وہی وصول کر رہے ہیں جس کے وہ مستحق ہیں ۔ خدا کا چُننے کا عمل کا کچھ لوگوں کے لیے شفقت آمیز ہونا دوسروں کے لیے غیر منصفانہ نہیں ہے ۔ کوئی بھی خدا کی طرف سے کسی چیز کا بھی مستحق نہیں ہے ، لیکن کوئی بھی یہ اعتراض نہیں کر سکتا ہے اگر وہ خدا کی طرف سے کوئی چیز حاصل نہیں کرتا ہے ۔ اِس کی ایک مثال یہ ہو گی کہ ایک آدمی بیس لوگوں کے ہجوم میں پانچ لوگوں کو بے ترتیبی سے ہاتھ کے ساتھ رقم تقسیم کرتا ہے ۔ کیا پندرہ لوگ جنہوں نے رقم وصول نہ کی پریشان ہوں گے ؟ غالبا ً ایسا ہی ہو ۔ کیا اُن کو پریشان ہونے کا حق ہے ؟ نہیں اُن کو حق نہیں ہے کیوں َ کیوں آدمی ہر کسی کورقم دینے کا پابند نہیں تھا ۔ اُس نے واضح طور پر کچھ لوگوں کے ساتھ مہربانی کرنے کا فیصلہ کیا ۔

اگر خدا اُن کو چُن رہا ہے جو نجات پا چُکے ہیں تو کیا یہ ہماری آزادانہ مرضی اور مسیح میں ایمان رکھنے کو تباہ و برباد نہیں کرتا ہے ؟ بائبل بیان کر تی ہے کہ ہم انتخاب کا حق رکھتے ہیں ۔ وہ تمام جو یسوع مسیح میں ایمان رکھتے ہیں نجات پائیں گے ( یوحنا 3 : 16 ، رومیوں 10 : 9 ۔ 10 ) بائبل کبھی بھی یہ بیان نہیں کر تی ہے کہ خدا کسی کو بھی جو اُس میں ایمان رکھتا ہے یا کسی کو واپس بھیج دیا جو اُسے تلاش کر رہا ہے رد نہیں کر رہا ہے ۔ ( استثنا 4 : 29 ) خدا کی پر اسراریت میں پہلے سے مقرر کرنے کا عمل خدا سے وحشت زدہ ( یوحنا 6 : 44 ) اور نجات پر ایمان رکھنے والے ایک آدمی کے ساتھ ساتھ کام کرتا ہے ( رومیوں 1 : 16 ) خدا پہلے سے مقرر کرتا ہے کہ کون نجات پائے گا اور ہمیں نجات پانے کی خاطر مسیح کا انتخاب کرنا چاہیے ۔ دونوں حقائق مساوی طور پر سچے ہیں ۔ رومیوں 11 : 33 دعویٰ کر تی ہے ، " واہ ! خدا کی دولت اور حکمت اور علم کیا ہی عمیق ہے ! اُس کے فیصلے کس قدر ادراک سے پرے اور اُس کی راہیں کیا ہی بے نشان ہیں !" ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



پہلے سے متعین کر دینے کا عمل کیا ہے؟ کیا پہلے سے متعین کر دینے کا عمل ( پیش تر) بائبل کے مطابق ہے ؟