مصیبت کے تذکرے میں دوبارہ جی اُٹھنا کب واقع ہونے والا ہے ؟




سوال: مصیبت کے تذکرے میں دوبارہ جی اُٹھنا کب واقع ہونے والا ہے ؟

جواب:
مصیبت کے تذکرے میں دوبارہ جی اُٹھنے کا وقت آج کل کی کلیسیا میں سب سے زیادہ اختلاف ِ رائے والے معاملات میں سے ایک ہے ۔ یہاں تین بنادی نکتہ نظر ، مصیبت سے پہلے ( دوبارہ جی اُٹھنا مصیبت سے پہلے واقع ہوتا ہے ) ، مصیبت کے دوران ( دوبار ہ جی اُٹھنا مصیبت کے درمیان کے قریب یا اُس میں واقع ہوتا ہے ) اور مصیبت کے بعد ( دوبارہ جی اُٹھنا مصیبت کے اختتام پر واقع ہوتا ہے) ہیں ۔ ایک چوتھا نکتہ نظر جو کہ عام طور پر غضب سے پہلے جی اُٹھنے کے طور پر جانا جاتا ہے ، مصیبت کے دوران جی اُٹھنے کے نکتہ نظر کی ہلکی سی ترمیم ہے ۔

پہلا مصیبت کے مقصد کو پہچاننا اہم جزو ہے ۔ دانی ایل 9 : 27 کے مطابق " ہفتہ" سات یعنی ( سات سال) جو کہ اپنی آنے والے ہیں ۔ دانی ایل کی 70 ہفتوں کی مکمل نبوت ( دانی ایل 9 : 20-27 ) قوم بنی اسرائیل کے بارے میں بات کر رہی ہے ۔ یہ وقت کا ایک دورانیہ ہے جس میں خدا اپنی توجہ خٓاص طو ر پر اسرائیل پر مرکوز کرتا ہے ۔ مصیبت میں ساتواں سبت ( ہفتہ) ایک ایسا وقت بھی ہو گا جب خدا خاص طور پر اسرائیل کے ساتھ مخاطب ہوتا ہے ۔ جبکہ یہ ضروری نہیں ہے کہ نشاندہی کرتا ہے کہ کلیسیا بھی موجود نہیں ہو سکتی ہے ، سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اِس عرصہ کے دوران زمین پر کلیسیائی ضرورت کیوں ہو گی ۔

دوبارہ جی اُٹھنے پر بنیادی کلام کاپیرا گراف 1 تھسلینکیوں 4 : 13-18 ہے۔ یہ بیان کرتا ہے کہ تمام زندہ ایماندار اُن تمام ایمانداروں کے ساتھ جو مر چُکے ہیں ، خداوند یسوع کا ہوا میں استقبال کریں گے اور ہمیشہ ہمیشہ اِس کے ساتھ رہیں گے ۔ دوبارہ جی اُٹھنا خدا کا زمین سے اپنے لوگوں کا ُٹھایا جانا ہے ۔ چند ایک آیات کے بعد 1 تھسلینکیوں 5 : 9 میں پولس رسول کہتا ہے ، " کیونکہ خدا نے ہمیں غضب کے لیے نہیں بلکہ اِس لیے مقرر کیا کہ ہم اپنے خداوند یسوع مسیح کے وسیلہ سے نجات حاصل کریں ۔" مکاشفہ کی کتاب جو ک بنیادی طور پر مصیبت کے وقتی دورانیے کے بارے میں ہے، ایک نبوتی پیغام ہے کہ کس طرح خدا مصیبت ک دوران زمین پر اپنا غضب ڈھائے گا ۔ یہ خدا کے ایمانداروں کے ساتھ اپنے وعدے کے خلاف دکھائی دیتا ہے کہ وہ غضب میں دُکھ نہیں اُٹھائیں گے اور پھر انہیں زمین پر مصیبت کے غضب کے سبب چھوڑ دیا جاتا ہے ۔ حقیقت میں خدا اپنے لوگوں کے زمین سے اُٹھائے جانے کے وعدے تھوڑی دیر بعد مسیحیوں کو غضب میں سے نجات دلانے کا وعدہ کرتا ہے ۔ اور اُن دو واقعیات کو باہم جوڑتا نظرآتا ہے ۔

دوبارہ جی اُٹھنے کے اوقات ایک اور مُشکل ترین پیرا گراف مکاشفہ 3 : 10 آیت ہے ، جس میں خدا " آزمائش کے وقت " جو کہ زمین پر آنے والا ہے اِس میں ایمانداروں کی نجا ت کا وعدہ کرتا ہے ۔ اس کا مطلب دو باتیں ہو سکتیں ہیں ۔ خواہ مسیح مصائب کے دوران ایمانداروں کی حفاظت کے گا یا وہ ایمانداروں کو مصائب سے نجات دلائے گا ۔ یہ دونوں یونانی لفظ جس کا ترجمہ " میں سے " کیا گیا ہے مستند معنی ہیں ، تاہم یہ جاننا ضروری ہے کہ کن ایمانداروں کے ساتھ اس میں سے نکالنے کا وعدہ کیا گیا ہے ۔ یہ محض آزمائش نہیں ہے لیکن آزمائش کا وقت ہے ۔ مسیح ایمانداروں کو اُسی قریب قریب آنے والے وقتی عرصے سے بچانے کا وعدہ کر رہا ہے جس میں مصائب ہوں گے ، جس کا نام مصیبت ہے ۔ مصیبت کا مقصد ، دوبارہ جی اُٹھنے کا مقصد ، 1 تھسلینکیوں 5 : 9 کے معنی اور مکاشفہ 3 : 10کی تشریح سب مصیبت سے پہلے کی صورتِ ھال کی واضح تصویر دیتی ہیں ۔ اگر بائبل بالکل اسی طرح اور مسلسل تشریح کر تی ہے تو مصیبت سے پہلے جی اُٹھنا سب سے زیادہ بائبل کے مطابق تشریح ہے ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



مصیبت کے تذکرے میں دوبارہ جی اُٹھنا کب واقع ہونے والا ہے ؟