کلیسیا کا دوبارہ زندہ ہونا کیا ہے ؟




سوال: کلیسیا کا دوبارہ زندہ ہونا کیا ہے ؟

جواب:
لفظ " دوبارہ زندہ " بائبل میں نہیں آتا ہے ۔ اگرچہ دوبارہ زندہ ہونے کا تصور کلام میں واضھ طور پر پڑھا جاتا ہے ۔ کلیسیا کا زندہ ہونا ایک واقعہ ہے جس میں خدا تمام ایمانداروں کو مصیبت کے دوران زمین پر اپنا راستباز انصاف دینے کے لیے زمین زندہ نکالے گا ۔ دوبارہ زندہ ہونا بنیادی طور پر 1 تھسلینکیوں 4 : 13-18 اور 1 کرنتھیوں 15 : 50-54 میں بیان کیا گیا ہے ۔ خدا تمام ایمانداروں کو زندہ کرے گا جو مر چُکے ہیں ، اُنہیں جلالی جسم بخشے گا ، ان کو زمین پر سے اُن ایمانداروں کے ساتھ جو ابھی تک زندہ ہیں اُٹھائے گا اور جن کو اِس وقت پر جلالی جسم بخشے جائیں گے ۔ " کیونکہ خداوند خود آسمان سے للکار اور مقرب فرشتہ کی آواز اور خدا کے نرسنگے کے ساتھ اُتر آئے گا ۔ اور پہلے وہ جو مسیح میں موئے جی اُٹھیں گے ۔ پھر ہم جو زندہ باقی ہوں گے اُن کے ساتھ بادلوں پر اُٹھائے جائیں گے تاکہ ہوا میں خداوند کا استقبال کریں اور اس طرح ہمیشہ خداوند کے ساتھ رہیں گے ۔" ( 1 تھسلینکیوں 4 : 16-17 )

اِس وقت پر دوبارہ زندہ ہونا فطرت میں فی الفور ہو گا اور ہم جلالی بدن حاصل کریں گے ۔ " دیکھو میں تُم سے بھید کی بات کہتا ہوؓں ۔ ہم سب تو نہیں سوئیں گے مگر سب بدل جائیں گے ۔ اور یہ ایک دم میں ، ایک پل میں ، پچھلا نرسنگا پھونکتے ہی ہو گا کیونکہ نرسنگا پھونکا جائے گا اور مُردے غیر فانی حالت میں اُٹھیں گے اور ہم بدل جائیں گے ۔" ( 1 کرنتھیوں 15 : 51-52 ) دوبارہ جی اُٹھنا جلالی واقعہ ہے ہم سب کو اِس کا مشتاق ہونا چاہیے ۔ اخر کار ہم گناہ سے آزاد ہو جائیں گے ۔ ہم ہمیشہ ہمیشہ کے لیے خدا کی حضوری میں رہیں گے ۔ دوبارہ جی اُٹھنے کی وسعت اور مطلب پر یہ بہت لمبی بحث ہے ۔ یہ خدا کی مرضی نہیں ہے ۔ ا س کی بجائے ، دوبارہ جی اُٹھنے کے تناظر میں خدا ہم سے " اُن الفاظ ایک دوسرے کی حوصلہ افزای " کرنے کو چاہتا ہے ( 1تھسلینکیوں 4 : 18 )



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



کلیسیا کا دوبارہ زندہ ہونا کیا ہے ؟